57

عاطف میاں کو کیوں ہٹایا، کونسل کا ایک اور رکن احتجاجاً مستعفی

لندن: حکومت پاکستان کی طرف سے عاطف میاں کو اکنامک ایڈوائزری کونسل سے برطرفی پر کونسل کے ایک اور رکن نے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا ہے۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق اکنامک ایڈوائزری کونسل کے رکن عمران رسول نے کونسل سے علیحدگی کا اعلان کردیا ہے۔ اپنے ٹویٹر پیغام میں عمران رسول نے کہا کہ عاطف میاں کو عہدے سے ہٹانے کی وجوہات سے اتفاق نہیں کرتا اس لئے بھاری دل سے استعفی دے رہا ہوں۔
عمران رسول نے کہا کہ مذہب کی بنیاد پر فیصلے کرنے کے حوالے سے حکومت سے اتفاق نہیں کرتا کیونکہ مذہبی بنیادوں پر فیصلے میرے اصولوں اور اقدار کے خلاف ہیں، پاکستان کو عاطف میاں کی صلاحیت کی ضرورت تھی، ملک میں ٹینلٹ کی کمی نہیں تاہم اس ٹیلنٹ سے فائدہ اٹھانے والی قیادت کی ضرورت ہے
واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان 18 رکنی اکنامک ایڈوائزری کونسل کونسل تشکیل دی تھی جس میں بیرون ملک کام کرنے والے تین ماہرین معاشیات عاطف میاں، عاصم اعجاز خواجہ اور عمران رسول کو بھی شامل کیا گیا تھا۔
کونسل کے ایک رکن عاطف میاں کے قادیانی ہونے کی وجہ سے پاکستان میں شدید تنقید کی گئی جس پر حکومت نے انہیں عہدے سے ہٹادیا۔ اس کے بعد یکے بعد دیگر کونسل کے دیگر اراکین عاصم اعجاز خواجہ عمران رسول نے بھی استعفیٰ ہونے کا اعلان کردیا ہے۔

فیس بک کے تبصرے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں