4,262

تحریک انصاف نے پنجاب کے وزیراعلیٰ کے لئے عثمان بزدار کو نامزد کر دیا

لاہور:عمران خان نے وزیراعلیٰ پنجاب کیلئے عثمان بزدار کو تحریک انصاف کا امیدوارنامزد کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں اتوار کو ہونے والے وزارت اعلیٰ کا انتخاب کے لئے مسلم لیگ (ن) کی جانب سے حمزہ شہباز قائد ایوان کے امیدوار نامزد ہیں جب کہ تحریک انصاف کی جانب سےاب ڈیرہ غازی خان تونسہ شریف سے کامیاب ہونے والے عثمان بزدار پی ٹی آئی کے امیدوار کے طور پر سامنے آئے ہیں۔
یہ بھی پڑھیں: پرویزالٰہی سپیکر اور دوست محمد ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی منتخب
عثمان بزدار کا نام بڑا سرپرائز ہے کیونکہ اس سے پہلے جن متوقع امیدواروں کا نام لیا جا رہا تھا ان میں یہ نام کہیں بھی نہیں تھا

عثمان بزدار کون ہیں؟
عثمان بزدارجنوبی پنجاب کی قبائلی سیاست میں ممتاز مقام رکھتے ہیں . وہ 2013 کے عام انتخابات میں مسلم لیگ ن کے امیدوار تھے تاہم وہ انتخاب جیتنے میں ناکام ہو گئے تھے، بعد ازاں وہ 2018 کے عام انتخابات سے قبل جنوبی صوبہ محاز کے ساتھ پی ٹی آئی میں شامل ہو گئے تھے وہ حالیہ عام انتخابات پی پی 286 سے تحریک انصاف کے ٹکٹ پر منتخب ہوئے ہیں، اس سے قبل ان کے والد فتح محمد بزدار بھی رکن اسمبلی رہ چکے ہیں۔ وہ بزدار قبائل کے بڑے سردار بھی ہیں۔
عثمان بزدار کے نام پر مختلف سیاسی تجزیہ نگاروں نے حیرانی کا اظہار کیا ہے اور عمران خان کی پنجاب جیسے بڑے صوبے کو سنبھالنے کے لئے سلیکشن کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے. تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ پنجاب کے تینوں بڑے عہدے ان سیاستدانوں کو دیے گئے ہیں جو پہلے کسی نہ کسی طرح مسلم لیگ ن کا حصہ رہے ہیں اور کیا عمران خان 22 سال میں ایک بھی ایسا سیاستدان ٹرینڈ نہیں کر سکے جو اس صوبے کو چلا سکے؟
واضح رہے کہ اس سے قبل علیم خان، راجہ یاسر ہمایوں اور سبطین خان کے نام متوقع امیدوار کے طور پر لئے جا رہے تھے تاہم کچھ روزقبل عمران خان نے کہا تھا کہ وہ پنجاب کے وزیراعلیٰ کے لیے ایک نوجوان لارہے ہیں جو کلین ہوگا اورجس پرکسی قسم کا کوئی سوالیہ نشان نہیں ہو گا

فیس بک کے تبصرے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں