56

جُوتے پہنیے-چربی پگھلائیے

جاپانی کمپنی نے ایسے انوکھے جُوتے بنائے ہیں جن کو پہن کر چلنے سے کیلوریز تیزی سے خرچ ہوتی ہیں. ان انوکھے جوتوں کو ”مسل ٹرینر“ کا نام دیا گیا ہے جو چربی کو تیزی سے پگھلاتےہیں.

تحقیق کے مطابق عام طور پر 30 منٹ پیدل چلنے سے 75 سے 150 کیلوریز برن ہوتی ہیں۔ اس بات کا انحصار تیز یا آہستہ چلنے پر بھی ہے۔ جاپان کی ایک کمپنی نے ایسے جوتے متعارف کرائے ہیں جن کی وجہ سے 30 منٹ پیدل چلنے سے 300 کیلوری برن ہوتی ہیں۔

مسل ٹرینر نامی ان خاص جوتوں کا وزن بہت زیادہ بڑھا دیا گیا ہے۔ عام طور پر کھیلوں کے عام جوتے کا وزن 200 سے 400 گرام ہوتا ہے لیکن مسل ٹرینر میں خواتین کے ایک پاؤں کے جوتے کاوزن 1200 گرام اور مردوں کے ایک پاؤں کے جوتے کا وزن 1400 گرام تک بڑھا دیا گیا ہے۔

اضافی وزن کے لیے ان جوتوں کے تلوں میں لوہے کی چھوٹی چھوٹی گولیاں ڈالی گئی ہیں۔ اس مقصد کے لیے بہترین تلے بنائے گئے ہیں. اضافی وزن کے باوجود یہ جوتے اپنے بہترین ڈیزائن کی وجہ سے بہت آرام دہ بھی ہیں۔

“مسل ٹرینر” کوٹوکیو گاکوگی یونیورسٹی اور اوساکا واکو یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے بھی چیک کیا ہے۔ انہیں‌چیک کرنے کی درخواست اس کمپنی نے خود کی تھی.

محقیقین کا کہنا ہے کہ مسل ٹرینر سے کیلوری خرچ کرنے کا عمل 25 فیصد بڑھ جاتا ہے. کیونکہ عام جوتوں کے مقابلے میں مسل ٹرینر سے زیادہ بہتر طریقے سے چربی پگھلائی جا سکتی ہے۔

سائنسدانوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ مسل ٹرینر سے ہمارے رہن سہن اور طرز زندگی میں بھی بہتری آئے گی. اور ہماری طرزِزندگی سے منسلک بیماریوں کو بھی ختم کرنے میں‌مدد ملے گی. جن میں ذیابیطیس اور ہائپر ٹینشن سرِفہرست ہے.

فی الحال “مسل ٹرینر” کی قیمت 13600 ین یا 122 ڈالر ہے اور یہ صرف سیا ہ اور سفید رنگ میں ہی دستیاب ہیں.

فیس بک کے تبصرے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں