51

بلیاں پالنادماغی اور جسمانی صحت کے لیے مفید قرار

بلیاں پالنے کا شوق رکھنے والے افراد کے لیے خوشخبری.

بلیوں کو پالتو جانور بنانے والے افراد ذہنی و جسمانی طور پر زیادہ صحت مند رہتے ہیں۔ اس حوالے سے کئی تحقیقات ہوئی ہیں۔
سکاٹ لینڈ میں 11سے 15 سال کی عمر کے 2200 بچوں پر تحقیق کی گئی. اس تحقیق سے پتا چلا ہے کہ جو بچے جتنا زیادہ اپنی بلی سے لگاؤ رکھتے ہیں، ان کا معیارِزندگی دوسروں سے بہترہوتا ہے۔ نہ صرف یہ بلکہ جن بچوں کا تعلق پالتو بلیوں سے گہرا ہوتا ہے، وہ بچےزیادہ تندرست، توانا، متوجہ اور خوش ہوتے ہیں۔ ایسے بچے گھر یا سکول میں تنہا وقت بھی خوش گزارتے ہیں۔

ایک آسٹریلیوی تحقیق کے مطابق بلیاں پالنے والوں کی نفسیاتی حالت، بلیاں نہ پالنے والوں سے بہترہوتی ہے، ۔ بلیاں پالنے والےزیادہ خوش اورپُر اعتمادنظرآتے ہیں۔ اُن کایہ بھی کہناہے کہ انہیں بہت کم ذہنی دباؤ کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

یہ تحقیق120 شادی شدہ جوڑوں پر بھی کی گئی اس کے مطابق جوجوڑے بلیاں پالتے ہیں وہ کم ذہنی دباؤ کا شکار ہوتے ہیں۔ ایسے افراد ذہنی طور پرزیادہ پر سکون ہوتے ہیں۔

ایک اورتحقیق کے مطابق جو افراد بلیاں پالتے ہیں وہ معاشرتی طور پر بھی زیادہ حساس ہوتے ہیں، ایسے افراد دوسرے افراد کہ پسند بھی کرتے ہیں اور ان پر بھروسہ بھی رکھتے ہیں . یہ تحقیق امریکن سائیکالوجیکل ایسوسی ایشن کی جانب سے شائع کی گئی تھی.

یہ تحقیق 13 سال تک 4435 مختلف افراد پر کی گئی. ایک تحقیق کے مطابق ایسے افراد جنہوں نے پالتو بلیاں رکھی ہوئی تھی، ان کے دل کے دورے سے مرنے کی شرح بھی بلیاں بالکل نہ پالنے والوں کی نسبت نہ ہونے کے برابرتھی۔

فیس بک کے تبصرے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں