اسحاق ڈار، جائیداد، نیلامی، فیصلہ، اردو نیوز، 69

اسحاق ڈار کے اثاثوں سے متعلق فیصلہ سنا دیا گیا

اسلام آباد: احتساب عدالت نے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈارکی جائیداد نیلام کرنےکے حوالے سے فیصلہ سنا دیا۔

اردو نیوزکے مطابق اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیرنے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈارکی جائیداد نیلامی سے متعلق محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے اسحاق ڈارکی جائیداد نیلام کرنے کا حکم دے دیا۔

اس خبرکوبھی پڑھیں:“قبضہ گروپ کی پیروی ثابت ہوئی تو بطور ایم این اے واپس نہیں جاؤ گے”، چیف جسٹس کی پی-ٹی-آئی رہنما کی سرزنش

عدالت نے فیصلے میں کہا ہے کہ اسحاق ڈارکی گاڑیاں قبضے میں لے کرصوبائی حکومت کے حوالے کر دی جائیں تاہم اختیار صوبائی حکومت کے پاس رہےگا کہ وہ جائیداد نیلام کریں یا اپنے پاس رکھیں جب کہ احتساب عدالت نے گلبرک کی جائیداد کی تعمیلی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے ٹرسٹس کے لاہوراوراسلام آباد میں مختلف بینکوں میں اکاوٴنٹس اور گلبرگ لاہور میں ایک گھر اور چار پلاٹس ہیں۔

اسحاق ڈار کے پاس دو مرسڈیز اور ایک کرولا گاڑی، ان کی اہلیہ کے پاس 3 لینڈ کروزر گاڑیاں ہیں جب کہ
اسحاق ڈار اور ان کی اہلیہ نے ہجویری ہولڈنگ کمپنی میں 34 لاکھ 53 ہزار کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے۔ اسحاق ڈار کی دبئی میں تین فلیٹس اور ایک مرسیڈیز گاڑی ہیں اوراسحاق ڈار کی بیرون ملک تین کمپنیوں میں شراکت ہے۔

واضح رہے کہ نیب نے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی جائیداد کی نیلامی کے لئے اسلام آباد ہائی کورٹ اور احتساب عدالت میں درخواست دائر کی تھی جس میں مؤقف پیش کیا گیا ہے کہ اسحاق ڈار نیب کو مطلوب ہیں، نیب اور عدالت اسحاق ڈار کو مفرور قرار دے چکی ہے۔

فیس بک کے تبصرے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں